Pages Menu
TwitterRssFacebook
Categories Menu

Posted by on Aug 17, 2018 in News | 0 comments

BLA has not carried out the 11 August suicide bombing attack in Dalbandin. AZAD Baloch

BLA has not carried out the 11 August suicide bombing attack in Dalbandin. AZAD Baloch

بلوچ لبریشن آرمی کے ترجمان آزاد بلوچ نے اپنے ایک جاری کردہ بیان میں کہا کہ 11 اگست کو دالبندین میں خودکش حملہ بی ایل اے نے نہیں کیا اور اس حملے کی ذمہ داری دو معطل کردہ کمانڈروں اسلم اور بشرزیب کی طرف سے ختم کیے گئے ترجمان جیئد بلوچ کا نام استعمال کرتے ہوئے قبول کیا گیا ۔ اس ترجمانی نام کو بی ایل اے کی ہائی کمان کی طرف سے دسمبر 2017 کو مکمل طور پر ختم کیا گیا تھا ۔ آزاد بلوچ نے کہا کہ اسلم بلوچ کے بیٹے کا نام بی ایل اے کی طرف سے نہ مجید بریگیڈ میں شامل کیا گیا تھا اورنہ اس خودکش حملے کی منظوری بی ایل اے کی طرف سے دی گئی تھی کیونکہ بی ایل اے کافدائی حملے کرنے اور ارکان کو مجیدبریگیڈ میں شامل کرنے کا ایک تنظیمی طریقہ کار ہے اور ہم تصدیق کرتے ہیں کہ اس حملے میں اس طریقہ کار پر عمل نہیں کیا گیا ۔ بی ایل اے جو فیصلے تنظیمی طور پر کرتی ہے وہ ان فیصلوں کی کامیابی اور ناکامیوں کی ذمہ دار ہے ۔ ترجمان نے کہا کہ بی ایل اے کے مجید بریگیڈ کے لیے فدائین کا چناو ایک طریقہ کار کے تحت ہوتا ہے جس میں فدائی حملہ کرنے والے کے فیصلے کے تمام پہلو کو پرکھا جاتا ہے جس میں جزباتی فیصلوں ، ذاتی ، خاندانی اور قبائلی دباو کی کوئی گنجائش نہیں ہوتی۔ اس تمام پراسس کے دوران کسی فدائی حملہ کی خوائش رکھنے والے رکن پر کسی طرح کادباو نہیں ہوتا اور ان افراد کو تنظیم کی سپرد کرنے کے بعد ان کا جائزہ لیا جاتا ہے کہ آیا ذہنی توازن کے لحاظ ایسے امیدوار اس قابل ہیں کہ وہ آزادنہ طور پر اپنی زندگی اور موت کا فیصلہ کرسکیں ۔ ترجمان نے کہا کہ بلوچستان کے جنگی حالات میں قابض کی طرف سے طاقت کے تناسب کے استعمال کے لحاظ سے بلوچ تنظیموں کو مکمل اخلاقی اور جنگی جواز حاصل ہے کہ وہ دوران جنگ فدائی حملوں کا استعمال کریں لیکن بی ایل اے کی طرف سے کسی بھی حملے کو انجام دینے سے پہلے فدائین کو بیان شدہ پراسس سے گزارا جاتا ہے ، اور اس کے علاوہ تنظیمی سطح پر کوئی کمانڈر کسی بھی طرح انفرادی فیصلے کے تحت فدائی کا چناو یا حملے کے مقام کا چناو نہیں کرسکتا ۔ بی ایل اے کے اصولوں کے تحت ایک چین آف کمانڈ کی منظوری کے تحت یہ پراسس مکمل ہوتا ہے اور سوچ سمجھ کر مقام اور وقت کا چناو کیاجاتا ہے تاکہ آپریشنل کامیابی کی زیادہ سے زیادہ مواقع ہوں۔ ترجمان نے کہا کہ اسلم بلوچ تنظیم کی پراسس اور قائم معیار کو پورا نہیں کرسکتے تھے اسی لیے انہوں نے اپنی ذاتی مزاج اور ذاتی فیصلے کے تحت اپنے بیٹے کو فدائی حملے کے لیے استعمال کیا ۔ ہماری تنظیم کی بنیاد بلوچ قومی آزادی کے مقصد کو حاصل کرنے کے لیے رکھی گئی لیکن اسلم بلوچ اب بی ایل اے کا نام اپنے ذاتی مقاصد اورذاتی مزاج کے تحت استعمال کررہا ہے ۔ تنظیم قوانین کے تحت چلتے ہیں اور قومی آزادی کو صرف ایک مضبوط تنظیم حاصل کرسکتی ہے۔ اس سے پہلے اسلم بلوچ نے پارٹی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے چپ چاپ ہندوستان گئے ، اس کے بعد جوابدہ ہونے کے بجائے بی ایل اے میں انتشار پیدا کرنے کی کوشش کی گئی ، بعد میں بی ایل ایف کی لیڈرشپ سے مل کر صحافیوں پرحملوں کا اعلان اور بے گناہ بلوچ عوام پر اس پالیسی کے تحت طاقت کا استعمال کیا گیا ۔ آزاد بلوچ نے کہا کہ ان تمام اعمال کے ذریعے بی ایل اے کی تنظیمی ساکھ کو نقصان پہچانے کی کوشش کی گئی اور بی ایل اے کی ہائی کمان نے بیان کے ذریعے ان تمام پالیسیوں کی تردید کی اور بلوچ قوم کو آگاہ کیا کہ اسلم اور بشیرزیب تنظیم میں انتشار لانے اور سازش کے مرتکب ہیں۔ ترجمان نے کہا کہ اس فدائی حملے میں تنظیمی طریقہ کار کو رروندتے ہوئے ذاتی مزاج پر ایک نوجوان کو بی ایل اے کے نام پر فدائی حملے کے لیے بھیجنے اور اس کی ذمہ داری ختم کیے گئے ترجمان کے نام پر قبول کرنے کو بھی ان کے چارج شیٹ میں شامل کیا جائے گا۔ ترجمان نے مزید کہاکہ اسلم بلوچ اور بشرزیب لوگوں کو گمرہ کرنے اور اپنی معطلی سے توجہ ہٹانے کے لیے کمانڈ کونسل جیسے الفاظ کا استعمال کر رہے ہیں ۔ اس طرح کے الفاظ استعمال کرنے سے نہ ان کی ذاتی کاروائیوں کو تنظیمی کاروائی کی حیثیت مل سکتی ہے نہ ہی معطل کردہ افراد کو تنظیمی جوابدہی سے استثنی حاصل ہوسکتی ہے۔ آزاد بلوچ نے کہا کہ بی ایل اے کا اصول اور انصاف کا معیار بلوچستان میں موجود دوسری تنظیموں کی طرح نہیں جنہوں نے اپنے تنظیمی ارکان کو چھوٹی چھوٹی اختلاف پر قتل کیا۔ بی ایل اے نے اسلم بلوچ اور بشیرزیب کو جوابدہ ہونے کے لیے ایک سے زاہد مواقع دیئے لیکن اس کے باوجود ان دونوں ارکان نے جوبداہ ہونے کے بجائے تنظیم کے خلاف مزید سازشیں کیں اور تنظیمی قانون و اصولوں کو روندا۔ آزاد بلوچ نے کہا کہ اب ان دونوں ارکان کو آخری موقع دیا جارہا ہے کہ وہ بی ایل اے کو جوابدہ ہوں ا گر جوابدہ ہونے کے بجائے اسلم بلوچ اور بشیرزیب تنظیم کے خلاف مزید سازش کرتے ہیں اور بی ایل اے کو نقصان دینے کی کوشش کرتے ہیں تو Downloads40ان دونوں کمانڈروں کی رکنیت مکمل طور پرختم کردی جائے گئی ۔ آزاد بلوچ

Post a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <strike> <strong>